کالم

تو اب کافر مروں؟ روف کلاسرا

سینیٹر انور بیگ کا میسج تھا: پاکستان کو بچایا جائے۔ اپنی بے بسی کا اظہار کرتے ہوئے لکھتے ہیں: ہمارے پاس تو کہیں اور جا کر رہنے کیلئے جگہ بھی نہیں ہے۔ اب اس عمر میں پاکستان چھوڑ کر کہاں

بدلتا امریکہ؟ نذیر ناجی

‘تارکین ِ وطن ‘صرف امریکہ کا ہی نہیں ‘کئی ممالک کے پیچیدہ مسائل میں سے ایک ہے‘جو ان کی معیشت پر بوجھ اور اندرونی سکیورٹی کے لیے بڑا خطرا تصور کیے جاتے ہیں۔بیشتر ممالک ان کے لیے خصوصی پالیسیاں بنا

تحریک انصاف اپنی قبر کیوں کھود رہی ہے؟ ھارون الرشید

شریف اور زرداری خاندان لوٹ کر نہیں آ سکتے۔ آئیں تو ٹھہر نہیں سکتے۔ فعال طبقات انہیں مسترد کر چکے۔ عدالتیں گوارا کریں گی اور نہ اسٹیبلشمنٹ۔ گستاخی معاف تحریک انصاف اپنی قبر کیوں کھود رہی ہے؟ آخر کار گرفتاری

غنویٰ بھٹو کی سیاست عمران منظور کی ادبی سیاست- ڈاکٹر محمد اجمل نیازی

غنویٰ بھٹو کو مرتضیٰ بھٹو کی شہادت کے بعد فوراً سیاست میں آنا چاہئے تھا۔ مگر اس میں ایک اندیشہ یہ بھی تھاکہ اسے بھی قتل کرا دیا جاتا۔ ہماری سیاست میں بھٹوزکو زندہ نہیں رہنے دیا جاتا۔ بالخصوص فاطمہ

ہماری معیشت میں ’’رونق‘‘ کیوں غائب ہو گئی- نصرت جاوید

نصاب کی کتابوں میں جو پڑھایا جاتا ہے عملی زندگی میں اکثر کام نہیں آتا۔ مثال کے طورپر اپنے ذاتی تجربے کی بنیاد پر یہ دعویٰ کرسکتا ہوں کہ میں نے شاذ ہی ایسا صحافی دیکھا جو صحافت میں ماسٹر

عمران خان کے لئے اب بھی وقت ہے۔۔۔۔ مظہر برلاس

عمران خان نے گدھا گاڑی چلانے والے کو جہاز دے دیا ہے۔ کشتی ہچکولے کھا رہی ہے اور کشتی سنبھالنے کی ذمہ داری اسے دی گئی ہے جسے بادبانی کا ہنر آتا نہیں، اس کے جھوٹ کی تمام اقساط سوشل

شکیل عادل زادہ کا شکوہ۔۔۔ رئوف کلاسراء

وہی ہوا جس کا ڈر تھا۔ صبح اٹھا تو شکیل عادل زادہ صاحب کا میسج دیکھا۔ میسج شاید انہوں نے اقبال دیوان پر کالم پڑھ کر بھیجا تھا۔ انہوں نے مجھ پر زیادہ الفاظ ضائع کرنے مناسب نہیں سمجھے بس

بہت مشکل ہے دنیا کا سنورنا۔۔۔ ہارون الرشید

جولاہا کپڑا بنتا ہے، ایک ایک دھاگہ۔ مزدور عمارت بناتے ہیں، ایک اینٹ پر دوسری اینٹ۔ حتیٰ کہ جلال و جمال جھلکتا ہوا۔بہت مشکل ہے دنیا کا سنورنا۔۔تری زلفوں کا پیچ و خم نہیں ہے۔۔ذوالفقار علی بھٹو اور عمران خان

اقدار مشرقی و مغربی نہیں ہوتیں۔۔۔وسعت اللہ خان

مجھ کند ذہن کو جو چند چیزیں شاید کبھی سمجھ میں نہ آسکیں ان میں بچپن سے اب تک گھر سے ریاست تک گونجنے والا یہ جملہ بھی ہے ’’یہ بات ہماری روایات و رواج و مشرقی اقدار کے خلاف

مخمصے۔۔۔ سلیم صافی

مسلم لیگ (ن) کا سب سے بڑامخمصہ یہ ہے کہ شریف ایک تھے اور ہیں مگر ان کی سیاسی سوچ ایک نہیں۔ ایک سوچ میاں نوازشریف اور مریم نواز کی ہے اور دوسری میاں شہباز شریف اور ان کے صاحبزادوں