Daily Archives: February 15, 2019

زعم زدہ نفس ۔۔۔ عاصمہ عزیز

’’ تایا ابا آپ یہاں۔۔۔‘‘ ایدھی سنٹر کے ہال نما کمرے کے وسط میں وہیل چیئر پر آنکھیں موندیں بیٹھے ،اپنے اداس اور وحشت ناک دنوں میں حسین یادوں کی پیوندکاری کرتے ہوئے انھیں ایک جانی پہچانی نسوانی آواز سنائی

ھنگوکی ڈائری ۔۔۔ محمد عظیم شاہ بخاری

کچھ ماہ پہلے خیبرپختونخواہ کے جنوبی اضلاع میں جانے کا موقع مِلا۔ شمالی پختونخواہ تواب اپنے گھر جیسا لگتا ہے لیکن جنوبی علاقوں کی طرف جانے کا یہ پہلا اِتفاق تھا۔ ہمارا سفر پِشاور سے دوآبہ براستہ بڈھ بیر، متانی،

سالا ایک مچھر ۔۔۔ مراد علی شاہد

روائت ہے کہ ایک گائوں میں مچھروں کی بکثرت ِ پیداوار اور لوگوں کو اکثریت سے مچھروں کا’’ ٹیکہ‘‘ لگانے کی وجہ سے گائوں کے لوگ بہت پریشان تھے۔گائوں کے مکھیا نے پنجائت بلا کر پنجوں سے مشورہ کیا کہ

عید بنا بابل۔۔۔رافعہ مستور صدیقی

میں اگر بولوں تو دم گھٹتا ہے۔ پر چپ رہنا بھی تو مشکل ہے۔ طویل خیالات پر مختصر الفاظ کے پہناوے پورے نہیں آتے۔ خیالات کو الفاظ دینا ضروری ہے۔ کاغذ پر دکھ اتارنا بھی تو مشکل ہے۔ تخیل کو

گیسوئے تابدار کو اور بھی تابدار کر ۔۔۔ علامہ اقبال

گیسوئے تابدار کو اور بھی تابدار کر ہوش و خرد شکار کر قلب و نظر شکار کر عشق بھی ہو حجاب میں حسن بھی ہو حجاب میں یا تو خود آشکار ہو یا مجھے آشکار کر تو ہے محیط بیکراں

ہوکے آہواں بھردی پئی آں۔۔۔ اظہر اقبال مغل

ہوکے آہواں بھردی پئی آں غماں دی اگ وچ سڑنی پئی آں وچھڑن والا تاں وچھڑ گیا اے ہن کاہدے توں ڈرنی پئی آن زخماں بھریا اے دل میرا نال دُکھاں دے لڑنی پئی آں یاداں اوہدیاں بہت ستاون بن

جناب اعجاز حیدر کی’’عکسِ موقوف‘‘پر خراجِ تحسین۔۔۔ ڈاکٹر سعید اقبال سعدی

لکھی ہے ’’عکسِ موقوف‘‘اس طرح اعجاز حیدر نے سخن کا کر دیا ہے حق ادا اعجاز حیدر نے یہ ہے اعجاز اس کے نام کا یہ پھر سخن گوئی دیا ہر شعر کو لہجہ نیا اعجاز حیدر نے بڑی قدرت

یادیں خوبصورت ہوتی ہیں ۔۔۔ خالد راہی

آئو کے دل کو کچھ بہلائیں ان وحشتوں سے کہیں دور لے جائیں چلو پرانے محلے کی سیر کر آئیں سلام کریں سب کو اور دیکھ دیکھ مسکرائیں جہاں گلی کے کونے پر یونہی گھنٹوں گزر جائیں نا کوئی موبائل

گر ٹوٹا ہے اک خواب ، تو کیا ہوا۔۔۔اسماء طارق

گر ٹوٹا ہے اک خواب ،تو کیا ہوا گر روٹھی ہیں کچھ خواہشیں، تو کیا ہوا گر نم ہیں آنکھیں ،تو کیا ہوا گر الجھے ہیں راستے ،تو کیا ہوا گر انجان ہے منزل، تو کیا ہوا گر دل ہے

عقیدہ اور عقیدت اور شکر گڑھ- ڈاکٹر محمد اجمل نیازی

شکر گڑھ نارروال سے سب سے پہلے معروف شاعر ادیب نے مجھے فون کیا۔ وہ شکر گڑھ سے نوائے وقت کا نمائندہ بھی ہے۔ مجھ سے بہت پہلے میرے بیٹے نے پوچھا تھا کہ شکرگڑھ میں شکر بہت ہوتی ہے۔